ابوذر ہو گیا واں

رفاقت حسین ممتاز

ابوذر ہو گیا واں

سراسر ہو گیا واں

سُخن ور آکھدے نیں

سُخن ور ہو گیا واں

میں اوہنوں وِیکھیا نئیں

نِچھاور ہو گیا واں

زمیں ساں امبراں دے

برابر ہو گیا واں

نِشانی موڑ بیٹھاں

ستمگر ہو گیا واں

میں موتی تُھکنا واں

قلندر ہو گیا واں

نھیرے بال کے تے

منور ہو گیا واں

رفاقت بولدا نئیں

کیہ پتھر ہو گیا واں

دوجی لِپی وچ پڑھو

Roman    ਗੁਰਮੁਖੀ   

رفاقت حسین ممتاز دی ہور شاعری