مولا ماتم اے

دِل کردا اے
تیرے نال رہواں
تیرے کول بہواں
تیرے دُکھ سہواں
دِل کرن دیاں؟

میں چاہنی آں
تیرا پیار مِلے
نہ ہون گِلے
پھٹ رہن سِلے
میں چاہندی رہواں؟

میں سوچنی آں
جدوں نکلے جان
میں ایہو کہواں
میں تیری ساں
میں پئی سوچاں

کاڈھ کڈھی بڑی
راتیں سوندی نہیں
پَیریں پاوندی نہیں
موت آوندی نہیں
حالیں کڈھدی رہواں؟

میں کَھڑی آں
کاسے پَیندا نہیں
ایدھر ویہندا نہیں
خیر دیندا نہیں
میں کھڑی رہواں؟

تُوں سُن لویں تے
دینہہ راتیں چڑھے
میرے بُوہیوں وڑھے
میرے نال لڑے
توں سُندا نہیں

مولا ماتم اے
تانگھ یار دی
بھُکھ پیار دی
نگاہ جاندی وار دی
میں کرنی آں